سیکیورٹی فورسز کا شمالی وزیرستان میں خفیہ اطلاعات پر آپریشن، 2 دہشتگرد ہلاک

13

راولپنڈی: سیکیورٹی فورسز نے شمالی وزیرستان میں دہشتگردوں کے خلاف آپریشن کیا جس کے نتیجے میں 2 دہشتگرد ہلاک ہو گئے۔ 

 

امن دشمنوں نے بنوں جانی خیل میں سیکیورٹی فورسز کی چوکی پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں جوان سرفراز علی شہید ہو گیا۔ میران شاہ میں سکیورٹی فورسز کے آپریشن میں 2 ملک دشمن گرفتار کرلئے گئے جبکہ 1 دہشتگرد ہلاک ہو گیا۔

 

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ(آئی ایس پی آر) کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے شمالی وزیرستان میں آپریشن دہشتگردوں کی موجودگی کی اطلاع پر کیا اور فائرنگ کے تبادلے میں 2 دہشتگرد ہلاک ہو گئے۔ ہلاک دہشتگردوں کی غیور اور بہاؤالدین کے نام سے شناخت ہوئی۔ ہشتگردوں سے بھاری مقدار میں اسلحہ، گولہ و بارود برآمد کیا گیا۔ 

آئی ایس پی آر کے مطابق ہلاک دہشتگرد سیکیورٹی فورسز کیخلاف کارروائیوں اور ٹارگٹ کلنگ سمیت اغوا برائے تاوان میں ملوث تھے۔ 

 

گزشتہ ہفتے دہشتگردوں نے بنوں جانی خیل میں فوجی چوکی پر حملہ کیا اور فائرنگ کے نتیجے میں 26 سالہ سپاہی سرفرازعلی شہید ہو گئے تھے اور ان کا تعلق وہاڑی سے تھا۔ دہشتگردوں کی فائرنگ پر سیکیورٹی اہلکاروں نے بھرپور جوابی کارروائی کی۔ شمالی وزیرستان کے علاقہ میران شاہ میں آپریشن میں 2 ملک دشمن گرفتار کر لئے گئے جبکہ 1 دہشتگرد ہلاک ہو گیا تھا۔ 

 

خیال رہے کہ رواں ماہ 5 جنوری کو سکیورٹی فورسز نے خیبرپختونخوا کے ضلع ٹانک، ڈی آئی خان اور کوٹ کلی جنوبی وزیرستان میں دہشتگردوں کی موجودگی کی اطلاع پر آپریشن کیا تھا۔ آپریشن کے دوران فائرنگ کا تبادلہ ہوا اور دو دہشتگرد مارے گئے جبکہ تین کو گرفتار کیا گیا تھا اور دہشت گردوں سے بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد کیا گیا۔ 

تبصرے بند ہیں.