گاڑی چوری ہونے سے بچانے کا نیا طریقہ دریافت

120

واشنگٹن : امریکا میں کار چوری ہونے سے بچانے کے لئے نیا طریقہ سامنے آگیا ۔ چوروں سے تنگ کار مالکان نے گاڑیاں کھلی چھوڑنا شروع کردی ہیں ۔ اکثر کارپارکنگ میں گاڑیوں کے پچھلے دروازے کھلے نظرآتے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق امریکا میں کار کے شیشے توڑ کر قیمتی اشیاء چرانے کی وارداتیں عام ہوگئی ہیں اور پولیس اس معاملے میں بے بس نظر آتی ہے جس کے بعد کارمالکان نے پارکنگ ایریا میں گاڑی کو کھلا چھوڑنے کا طریقہ اپنا لیا ہے ۔ اس طرح چوروں کو یہ پیغام جاتا ہے کہ گاڑی میں کوئی قیمتی چیز نہیں ہے لہذا شیشہ توڑ کر گاڑی کے اندر جانے کا تکلف کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔  دوسری صورت میں بند گاڑیوں کے شیشے توڑ کر چور اندر جھانکتے ہیں اور بسا اوقات کچھ نہ ملنے کی صورت میں بھی شیشے کا نقصان ضرور ہوجاتا ہے۔

سان فرانسسکو، آک لینڈ اور بے ایریا کے رہائشی افراد اس پریشانی سے بچنے کے لیے اپنی گاڑیاں پارک کرتے وقت ڈکی کھول دیتے ہیں۔ تاہم بعض افراد نے اسے عوامی بے بسی قرار دیا ہے کہ لوگ اپنی کاروں کے دروازوں پر لگے قیمتی شیشوں کو ٹوٹنے سے بچانے کے لیے یہ اہم قدم اٹھانے پر مجبور ہوچکے ہیں۔

پولیس حکام نے عوام کو یہ طریقہ چھوڑنے کا کہا ہے   تاہم ایک اعلیٰ پولیس افسر نے بتایا کہ انہوں نے  40 سالہ نوکری میں ایسا منظر نہیں دیکھا جب کاروں کے شیشے بچانے کے لیے یہ عجیب قدم اٹھایا گیا ہو۔ پولیس کے مطابق چور اسے دعوت نامہ بھی سمجھ سکتے ہیں۔

پولیس کے مطابق چور کچھ نہ پاکر ٹائر، بیٹری اور اندر لگے ساؤنڈ سسٹم کو چراسکتے ہیں۔ تاہم سان فرانسسکو اور ملحق علاقوں میں شیشہ توڑ چوری کی وارداتوں میں گزشتہ برس کے مقابلے میں 32 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ اس کے علاوہ خود کار چرانے کی وارداتیں بھی بڑھی ہیں ۔

تبصرے بند ہیں.