امریکا میں جعلسازی سے 56 لاکھ ڈالر ہتھیانے والے پاکستانی کو سزا

121

واشنگٹن : امریکا میں کورونا وائرس کی وباء کے دوران جعلسازی سے  56 لاکھ  بٹورنے والا پاکستانی گرفتار کرلیا گیا ۔ پاکستانی شہری اظہر سرور رانا کو جعلسازی پر 5 سال چار ماہ قید کی سزاسنادی گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست نیو جرسی میں کورونا کی  وبا کے دوران پاکستانی شہری اظہر سرور رانا نے جعلی کمپنی کے نام پر 56 لاکھ ڈالر کا قرض لیا تھا ۔

حکام نے کہا ہے کہ 31 برس کے اظہر سرور رانا نامی شخص کو نہ صرف جیل کاٹنا ہوگی بلکہ رقم بھی واپس کرنا ہوگی۔

حکام کے مطابق  اظہر سرور رانا نے اپریل 2020 میں جعلی دستاویزات کی بنیاد پر ایک کروڑ ڈالرز کے قرض کی درخواست جمع کرائی تھی۔ تاہم مئی 2020 میں اظہر سرور رانا کو 56 لاکھ ڈالرز  قرض کی مد میں دیئے گئے تھے ۔

چارج شیٹ کے مطابق قرض کی رقم کو اظہر سرور رانا نے ذاتی اخراجات میں استعمال کیا جس میں گاڑیوں کی مشہور  برانڈ کی ڈیلر شپ بھی شامل تھی۔

اظہر رانا نے لاکھوں ڈالرز خاندان کے لوگوں کے نام پر پاکستان بھی منتقل کیے۔ اظہر سرور رانا کو  دسمبر 2020 میں امریکا سے پاکستان جانے سے پہلے گرفتار کیا گیا تھا ۔

تبصرے بند ہیں.