50 ہزار سے کم تنخواہ والوں کو احساس راشن پروگرام سے فائدہ ہوگا: وزیراعظم

414

سکردو: وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ آج سے پورے پاکستان میں احساس راشن پروگرام شروع ہو رہا ہے، جن لوگوں کی تنخواہ 50 ہزار سے کم ہے انہیں احساس راشن پروگرام سے فائدہ ہوگا۔
سکردو میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا  کہ   گلگت بلتستان ملک کے دوسرے حصوں کی نسبت ترقی میں پیچھے ہے، بلوچستان اور اندرون سندھ کے لوگ بھی ترقی کےسفرمیں پیچھےرہ گئے، کوشش ہے کہ پیچھے رہ جانے والوں کی حالت بہتر ہو۔انہوں نے کہا کہ سکردو کی سڑک اور انٹرنیشنل ایئرپورٹ بننے سےترقی کی نئی راہیں کھلیں گی،یہاں سیاحت کو فروغ ملے گا اور  بیرون ملک مقیم پاکستانی چھٹیاں منانے اب گلگت بلتستان آئیں گے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ سکردو کو آزاد کشمیر سے جوڑنے جارہے ہیں جس سے سیاحت مزید پھیلے گی ،  سیاحت کا شعبہ پاکستان کا بہت بڑا اثاثہ بن سکتا ہے۔ انہوں نے سکردو کی عوام سے درخواست کی کہ یہاں زمین بہت کم ہے اس کی حفاظت کریں اور فروخت نہ ہونے دیں،دنیا میں کہیں اتنی خوبصورتی نہیں جتنی گلگت بلتستان میں ہے۔انہوں نے کہا کہ 2012 سے 2018 تک خیبرپختونخوامیں تیزی سےغربت میں کمی ہوئی۔ وزیر اعظم نے اپنے خطاب میں کہا کہ کوئی ملک ترقی نہیں کرسکتا جب تک غریب لوگوں کو اوپرنہ لایا جائے۔ کورونا کی وجہ سے پوری دنیا کو مہنگائی کا سامنا ہے، احساس راشن پروگرام کے تحت آٹا، گھی، چینی اور دالوں پر 30فیصدرعایت دی جائے گی۔ 50 ہزار سے کم تنخواہ والوں کو احساس راشن پروگرام سے فائدہ ہو گا۔
وزیراعظم نے مزید کہا کہ کامیاب پاکستان کے ذریعے 220 لاکھ خاندانوں کو 5 لاکھ تک قرض بغیر سود  دیں گے، انہوں نے کہا کہ پنجاب میں صحت انصاف کارڈ عوام کو دیا جارہا ہے اور مارچ تک پورے ملک کو دیدیا جائےگا۔

تبصرے بند ہیں.