اپنے چہرے اور آواز سے کروڑوں کمائیں

110

ماسکو: روس کی ایک روبوٹکس کمپنی نے اعلان کیا ہے کہ جو کوئی بھی اسے اپنے چہرے کے خدوخال اور آواز استعمال کرنے کی قانونی اجازت دے گا تو اسے دو لاکھ ڈالر (ساڑھے تین کروڑ پاکستانی روپے) کا خطیر معاوضہ دیا جائے گا۔

 

روسی میڈیا کے مطابق یہ پیشکش ’پروموبوٹ‘ نامی کمپنی کی طرف سے ہے جو صنعتی اور تجارتی پیمانے پر انسان نما روبوٹ بنانے والی روسی کمپنی ہے۔

 

پروموبوٹ کا کہنا ہے کہ حال ہی میں انہیں ایک بڑے بین الاقوامی کلائنٹ کی طرف سے ایسا روبوٹ تیار کرنے کا آرڈر ملا ہے جس کا چہرہ اور آواز، دونوں کسی اصلی اور جیتے جاگتے انسان کے ہوں۔ اسی مقصد کے تحت پروموبوٹ نے یہ اعلان کیا ہے جس میں دنیا کے کسی بھی ملک، علاقے، رنگ اور نسل سے تعلق رکھنے والے ایسے تمام افراد سے درخواستیں طلب کی گئی ہیں جو اپنا چہرہ اور آواز ساری زندگی کےلیے انہیں لائسنس پر دے سکیں۔

 

البتہ درخواست دینے والے کےلیے ضروری ہے کہ اس کی عمر 25 سال یا زیادہ ہو اور منتخب شخص کو اس کے بدلے میں دو لاکھ ڈالر کا معاوضہ دیا جائے گا لیکن وہ صرف ایک مرتبہ کے لیے ہو گا۔

 

پروموبوٹ کا کلائنٹ جیسے ہی کسی شخص کے چہرے کو حتمی طور پر منتخب کرے گا، قانونی معاہدے کے بعد اس شخص کے چہرے کا تھری ڈی ماڈل بنالیا جائے گا تاکہ روبوٹ کو وہ چہرہ دیا جا سکے۔ اس کے علاوہ منتخب شخص کو 100 گھنٹے تک اپنی گفتگو بھی ریکارڈ کروانا ہوگی جسے اس روبوٹ کی آواز بنایا جائے گا۔

 

پروموبوٹ نے یہ نہیں بتایا کہ اس کا وہ ’’بین الاقوامی کلائنٹ‘‘ کون ہے لیکن ایک اندازے کے مطابق اور یہ ممکنہ طور پر ٹیکنالوجی کے شعبے سے تعلق رکھنے والی کوئی بڑی کمپنی بھی ہو سکتی ہے۔

 

تبصرے بند ہیں.