اپنے سرحدی معاملات خود دیکھ سکتے ہیں، ناروے نے نیٹو کو خبردار کر دیا

61

اوسلو: ناروے کے وزیر خارجہ اینیکن ہیٹ فیلڈ نے کہا ہے یہ ناروے کے بہترین مفاد میں ہے کہ وہ اپنی مسلح افواج کا استعمال کرتے ہوئے اپنے شمالی علاقوں کی دیکھ بھال خود کرے۔

 
ناروے کی لیبر پارٹی جو اس سال کے شروع میں ہی برسرِ اقتدار آئی ہے  جو چاہتی ہے کہ اتحادی ممالک کے طیارے اور جہاز روس کے قریب سرحدی علاقوں سے کچھ فاصلہ رکھیں۔

 
جب وزیر خارجہ سے براہ راست سوال کیا گیا کہ کیا حکومت امریکہ اور برطانیہ کے بحری جہازوں اور ہوائی جہازوں کو بھی روس سے دور رکھنا چاہتی ہے تو انہوں نے کہا کہ وہ ناروے کے مفادات کے تحفظ کے لیے اس بارے میں دونوں ممالک کے ساتھ بات چیت کی خواہاں ہیں۔ یہ ناروے کے مفاد میں ہے کہ وہ اپنے دفاع کیلئے خود ان علاقوں کی دیکھ بھال کرے۔

ہیٹ فیلڈ کا یہ موقف مسلح افواج کے آپریشنل ہیڈ کوارٹر کے سابق کمانڈر رون جیکوبسن سے کچھ مختلف نہیں ہے جنہوں نے بحیرہ بیرنٹس میں روس کے اقتصادی زون تک نیٹو کی کاروئیوں پر کافی تنقید کی تھی۔

 

تبصرے بند ہیں.