زرتاج گل کو مشترکہ اجلاس کیلئے واپس آنا پڑا تھا، ملک امین اسلم

135

اسلام آباد: یو این ماحولیاتی کانفرنس میں مشیر برائے ماحولیاتی تبدیلی امین اسلم کا زرتاج گل سےجھگڑےکی خبروں پر ‏ردعمل آگیا۔

ملک امین اسلم نے جھگڑے کی خبروں کو بے بنیاد اور گمراہ کن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ریاض فتیانہ کی پبلک ‏اکاؤنٹس کمیٹی میں کی گئی گفتگو جھوٹی ہے فاضل ممبر کا الزام 200 فیصد جھوٹ اور غلط بیانی پر مبنی ہے۔

ملک امین اسلم نے واضح کیا کہ زرتاج گل کو مشترکہ اجلاس میں شرکت کے باعث واپس آنا پڑا تھا جس پر کہا گیا ‏کہ کانفرنس میں پاکستان کے کروڑوں روپے ڈوب گئے حالانکہ گلاسکو کانفرنس پر پاکستان کا ایک روپے بھی خرچ نہیں ہوا یہ ‏کانفرنس مکمل طور پر غیر ملکی ڈونرز کے تعاون سے ہوئی۔

امین اسلم نے کہا کہ ریاض فتیانہ کو غلط فہمی کیوں ہوئی سمجھنے سے قاصر ہوں حالانکہ ریاض فتیانہ خود بغیر ‏دعوت نامے این جی او اسپانسر پر پہنچے تھے، کانفرنس میں پاکستانی پویلین مصروف ترین مرکز رہا اور دنیا بھر کے ‏میڈیا نے پاکستانی پویلین اور کلائمیٹ وژن کو کوریج دی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ 50 کے قریب موسمیاتی تبدیلی وزرا سے دوطرفہ ملاقاتیں ہوئیں کانفرنس میں امریکی صدر نے ‏پاکستانی کوششوں کو سراہا اور برطانوی وزیراعظم تو خود پاکستانی پویلین تشریف لائے۔

چیئرمین کمیٹی رانا تنویر حسین کی زیر صدارت پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں ریاض فتیانہ نے ‏انکشاف کیا کہ گلاسکو میں وزیر مملکت زرتاج گل اور مشیر برائے ماحولیاتی تبدیلی امین اسلم کے درمیان لڑائی ‏ہوئی اور زرتاج گل امین اسلم کے ساتھ لڑ کر وطن واپس آ گئی۔

تبصرے بند ہیں.