ٹم پین نازیبا میسج اسکینڈل پر مستعفی

149

میلبورن: آسٹریلوی ٹیسٹ کرکٹ ٹیم کے کپتان ٹم پین نازیبا میسج اسکینڈل پر مستعفی ہو گئے ہیں۔ ٹم پین نے اسٹیون اسمتھ کے بال ٹمپرنگ اسکینڈل کے بعد کپتانی کا عہدہ سنبھالا تھا۔

ٹم پین نے 2017 میں مبینہ طور پر نازیبا ٹیکسٹ میسجز کیے تھے۔ ٹم پین نے نازیبا میسجز کا اعتراف کرتے ہوئے پریس کانفرنس میں مستعفی ہونے کا اعلان کیا۔ ٹم پین پر 2017 کی ایشیز سیریز کے دوران کرکٹ تسمانیہ کی سابق ملازمہ کو نازیبا پیغامات بھیجنے کا الزام تھا۔ کرکٹ آسٹریلیا نے ٹم پین کے خلاف نازیبا میسجز کرنے کی تحقیقات کا آغاز کیا تھا۔

پریس کانفرنس کے دوران ٹم پین آبدیدہ ہوگئے اور انہوں نے مداحوں سے معافی بھی مانگی۔ ٹم پین کا کہنا تھا کہ یہ مشکل فیصلہ تھا لیکن میری فیملی اورکرکٹ کیلئے بہترہے۔

خیال رہے کہ رواں ہفتے ہی کرکٹ آسٹریلیا نے انگلینڈ کے خلاف ایشزسیریز کیلئے ٹم پین کی قیادت میں 15 رکنی اسکواڈ کا اعلان کیا ہے۔ انگلینڈ کیخلاف آسٹریلیا کے فاسٹ بالرپیٹ کمنز کے کپتان بننے کے امکان۔

تبصرے بند ہیں.