حکومتی ارکان جہاد سمجھ کر قانون سازی میں حصہ لیں، وزیراعظم

66

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران  خان نے کہا ہے کہ دھاندلی کا واحد توڑ الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) ہے، کرپٹ سسٹم کی پیداوار تبدیلی نہیں آنے دیں گے۔

 

ارکان پارلیمنٹ سے خطاب میں وزیر اعظم نے کہا کہ تبدیلی ہمیں لانی ہے اور آپ کا مقابلہ مافیا سے ہے جبکہ جہاد سمجھ کر قانون سازی میں حصہ لیں۔

 

انہوں نے حکومتی ارکان کو پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں شرکت یقینی بنانے کی ہدایت کی اور کہا کہ پاکستان میں پہلی مرتبہ فری اینڈ فیئر الیکشن ہو سکتا ہے۔ اپوزیشن نے اصلاحات پر کوئی تجویز نہیں دی اور الیکشن کمیشن بھی ای وی ایم پر عجیب، عجیب اعتراض کرتا ہے۔

 

اُن کا کہنا تھا کہ قابل شناخت ووٹ کی اپوزیشن اور الیکشن کمیشن نے مخالفت کی، کوئی اب تک جواب نہیں دے سکا اس میں ہمارا کیا فائدہ ہے۔ سینیٹ الیکشن کے لیے پیسے لینے کی وڈیوز دکھانے کے باجود کچھ نہیں ہوا، نہ الیکشن کمیشن نے پیسے لینے کی وڈیو پر کچھ کیا نہ حکومت نےکیا۔

 

انہوں نے کہا کہ 1970 کے بعد تمام انتخابات متنازع ہوئے، ہارنے والے نے نتیجہ نہیں مانا، ہم 50 سال میں آزاد شفاف انتخابات نہیں کراسکے۔ اصلاحات حکومت نے کرنی ہوتی ہے، ڈیڑھ سال میں اپوزیشن نے کوئی تجویز نہیں دی، 2018 میں اپنا الیکشن کمشنر اور پولنگ عملہ رکھنے والے کہتے ہیں دھاندلی ہوگئی۔

 

اُن کا کہنا تھا کہ اخلاقیات قائم ہے تو ایٹم بم مارکر بھی کسی قوم کو ختم نہیں کرسکتے، حکومت اور اتحادی ارکان جہاد سمجھ کر پارلیمنٹ اجلاس میں شریک ہوں۔

تبصرے بند ہیں.