قومی سلامتی کی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس شروع، عسکری حکام قومی سلامتی امور پر بریفنگ دیں گے

61

اسلام آباد: سینیٹ اور قومی اسمبلی کے ارکان پر مشتمل قومی سلامتی کی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس شروع ہو گیا ہے جس میں چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ اور ڈی جی آئی ایس آئی سمیت اعلیٰ عسکری قیادت بھی شریک ہے، عسکری حکام قومی سلامتی کے موجودہ امور پر بریفنگ دیں گے۔
اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی زیر صدارت قومی اسمبلی ہال میں ہونے والے اجلاس میں قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف، پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) سے ڈپٹی پارلیمانی لیڈر شاہ محمود قریشی، پیپلز پارٹی پارلیمنٹرین سے بلاول بھٹو زرداری، عوامی مسلم لیگ سے شیخ رشید احمد، مسلم لیگ (ق) سے چوہدری طارق بشیر چیمہ، بلوچستان نیشنل پارٹی سے اختر مینگل، ایم کیو ایم سے ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی، بلوچستان عوامی نیشنل پارٹی سے خالد حسین مگسی، جی ڈی اے سے غوث بخش خان مہر، ایم ایم اے سے مولانا اسعد محمود اور عوامی نیشنل پارٹی سے امیر حیدر اعظم خان شرکت کر رہے ہیں۔
ذرائع کے مطابق اس کے علاوہ سینیٹ سے پارلیمانی کمیٹی کے اراکین کو بھی اجلاس میں مدعو کیا گیا ہے جبکہ پرویز خٹک، ا عجاز شاہ، علی امین خان گنڈاپور، شفقت محمود، اسد عمر، شبلی فراز اور دیگر وزراءکے علاوہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کے مشیر بابر اعوان اور معاون خصوصی معید یوسف بھی اجلاس میں خصوصی شرکت کریں گے۔
قومی سلامتی کی پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس میں چاروں صوبائی وزرا ئے اعلیٰ، صدر و وزیر اعظم آزاد کشمیر اور وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان بھی شریک ہیں جبکہ قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کے تمام ممبران بھی خصوصی طور پر اجلاس میں شریک ہوں گے۔

ذرائع کے مطابق عسکری حکام اجلاس کے شرکاءکو قومی سلامتی کے موجودہ امور پر بریفنگ دیں گے اور تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) سے معاہدے پر بھی ممبران پارلیمینٹ کو اعتماد میں لیا جائے گا، جبکہ اجلاس میں اعلیٰ عسکری حکام افغانستان کی صورتحال پر بھی بریفنگ دیں گے۔

تبصرے بند ہیں.