پی ٹی وی کا شعیب اختر کو ہرجانے کا نوٹس، راولپنڈی ایکسپریس نے بڑا اعلان کر دیا

122

لاہور: پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق سپیڈ سٹار شعیب اختر نے سرکاری ٹی وی کی جانب سے موصول ہونے والے لیگل نوٹس پر دکھ کا اظہار کیا ہے اور اس کا جواب دینے کیلئے قانونی ٹیم کی خدمات بھی حاصل کر لی ہیں۔ 
شعیب اختر نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں کہا کہ سرکاری ٹی وی کا نوٹس دیکھ کر بہت مایوسی ہوئی۔ اپنی عزت اور ساکھ کی حفاظت کرنے میں بری طرح ناکام ہونے کے بعد، اب انہوں نے مجھے ریکوری نوٹس بھیجا ہے۔ لیکن میں ایک فائٹر ہوں اور ہار نہیں مانوں گا، میرے وکیل، اس مسئلے کو قانون کے مطابق آگے بڑھائیں گے۔

واضح رہے کہ شعیب اختر کو سرکاری ٹی وی نے بغیر نوٹس استعفیٰ دینے پر 10 کروڑ 30 لاکھ روپے ہرجانے کا نوٹس بھجوایا گیا ہے جس کے متن میں کہا گیا ہے کہ شعیب اختر نے بتائے بغیر دبئی جا کر بھارتی کرکٹر کے ساتھ شو کیا، جس سے سرکاری ٹی وی کو نقصان ہوا جبکہ ٹی 20 ورلڈکپ کے دوران شعیب اختر پی ٹی وی پر تبصرے کیلئے غیر حاضر بھی رہے۔
نوٹس کے ذریعے سرکاری ٹی وی نے شعیب اختر سے مطالبہ کیا کہ نوٹس پیریڈ کے بغیر استعفیٰ دینے پر 3 ماہ کی تنخواہ کے مساوی 33 لاکھ روپے ادا کئے جائیں جبکہ پی ٹی وی کو ہونے والے نقصان کی مد میں 100 ملین روپے ادا کریں۔
یاد رہے کہ 26 اکتوبر کو سرکاری ٹی وی پر لائیو شو کے دوران میزبان ڈاکٹر نعمان نیاز نے شعیب اختر سے شو چھوڑ کر جانے کا کہا تھا جس کے بعد انہوں نے لائیو پروگرام کے دوران ہی استعفیٰ دیدیا اور شو سے اٹھ کر چلے گئے تھے۔ 

تبصرے بند ہیں.