چینی کی فی کلو قیمت 130 روپے سے تجاوز کر گئی

85

لاہور: چینی کی طلب و رسد میں بگاڑ کے باعث فی کلو قیمت 130 روپے سے تجاوز کر گئی ہے جو شہریوں کی جیبوں پر بھاری پڑنے لگی ہے۔ 

 

مقامی چینی کا سٹاک کم ہونے لگا ہے جس سے ملک بھر میں چینی کے ذخائر ایک لاکھ 20 ہزار میٹرک ٹن رہ گئے ہیں جبکہ پرچون بازاروں میں ڈیمانڈ اور سپلائی میں پیدا ہونے والے بگاڑ کے باعث چینی کی فی کلو قیمت 130 روپے سے تجاوز کر گئی اورلاہور کے شہری مقامی چینی کی تلاش میں خوار ہونے لگے۔

 

چینی کے بحران سے متعلق ذرائع کا کہنا تھا کہ مقامی موٹی چینی کا سٹاک تیزی سے ختم ہونے لگا ہے اور پنجاب کے پاس 47 ہزار، سندھ 69300 اور کے پی کے 4500 میڑک ٹن چینی رہ گئی ہے جبکہ ملک میں چینی کے سٹاک 15روز کے رہ گئے ہیں۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ سپلائی بُری طرح متاثر ہونے سے ہول سیل مارکیٹ میں مقامی چینی کے نرخ 124 روپے ہو گئے ہیں اور 50 کلو مقامی چینی کا تھیلا 6200 روپے کا ہو گیا جبکہ پرچون و کریانہ دکانوں پر مقامی چینی نایاب ہونے لگی ہے۔ 

 

خیال رہے کہ حکومت درآمدی باریک چینی مخصوص دکانوں اور سٹورز کو فراہم کر رہی ہے جبکہ گھریلو صارفین کیلئے درآمدی چینی 90 روپے کلو فروخت کی جا رہی ہے تاہم شہری باریک چینی خریدنے سے گریزاں ہیں۔

 

دو روز میں چینی کی فی کلو قیمت میں 5 روپے کلو اضافے سے سندھ و پنجاب میں چینی کی ایکس مل قیمت 127 اور 128 روپے فی کلو تک پہنچ گئی ہے۔

 

 

تبصرے بند ہیں.