جب سے مریم سے شادی ہوئی اس کو وزیر اعظم ہی دیکھ رہا ہوں، کیپٹن (ر) صفدر

86

اسلام آباد: کیپٹن (ر) صفدر کا کہنا ہے کہ جب سے مریم سے شادی ہوئی اس کو وزیر اعظم ہی دیکھ رہا ہوں۔ 

 

سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز کے شوہر اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے داماد کیپٹن (ر) صفدر نے کہا کہ جب سے مریم سے شادی ہوئی اس کو وزیر اعظم ہی دیکھ رہا ہوں اور یہ وزیراعظم بننے والی بات سیاسی نہیں روحانی ہے جبکہ دسمبر تک پتہ نہیں ملک کیا کچھ ہو جائے شاید الیکشن کا اعلان ہو جائے جبکہ ہو سکتا ہے ہمیں اپنے بیٹے کی شادی دسمبر سے آگے کرنی پڑ جائے۔

 

مریم نواز کے شوہر کا مزید کہنا تھا کہ لندن میں نواز شریف کی ملاقاتیں ہوتی رہتی ہیں اور وہ 22 کروڑ عوام کے لیڈر ہیں ان سے ہر کوئی ملنا چاہتا ہے کیونکہ انہوں نے ہمیشہ ایٹم بم اور موٹروے کی بات کی اور وہ کوئی بہتر ہی فیصلہ کریں گے لیکن ہم کسی غیر جمہوری قوت کے ساتھ ہاتھ ملانے سے پہلے اپنا ہاتھ کاٹ دیں گے اور ہم نے ڈیل کرنی ہوتی تو راحیل شریف کو توسیع دے دیتے یا پھر ڈیل کرنی ہوتی تو 2018 میں جیلوں میں نہ جاتے تاہم ہماری ڈیل سڑکوں پر ہو گی اور پہلے میں نے وردی پہنی ہوئی تھی اب میں جمہوریت اور آئین کے ساتھ ہوں ۔ 

 

کیس کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کیپٹن (ر) صفدر نے کہا کہ ڈر لگتا ہے کہیں ہمیں شمالی علاقہ جات کی سیر نہ کروا دی جائے اور زمین سے متعلق میرا کیس عدالت میں ہے اس لئے اس پر زیادہ بات نہیں کروں گا لیکن ہمارے کیس کی ایف آئی آر میں لکھا ہے کہ ہم نے سابق وزیراعظم نوازشریف کو باہر پھینک دیا ہے تو سابق ایم این اے کیا چیز ہے۔

 

کیپٹن (ر) صفدر کا کہنا تھا کہ بھارت 1965 اور 1971 کی جنگوں میں گڑھی حبیب اللہ پْل کے ٹرمینل نہیں گرا سکا لیکن قبضہ گروپ وہاں پلازہ بنا رہا ہے اور قانون کے سامنے سب کی حیثیت برابر ہے جبکہ میں نے اپنے ضلع میں قبضہ گروپ کو ایکسپوز کر دیا ہے اور اب ان کے خلاف کارروائی بھی ہو گی ۔ انہوں نے کہا کہ گریڈ 22 کا ریٹائرڈ افسر سمجھتا ہے اس کے تعلقات ہیں اور وہ طاقتور ہے جبکہ لوگوں اور وکلاء کے ساتھ کشترا سیکنڈز کی تحقیقات کیلئے رجوع کروں گا۔

تبصرے بند ہیں.