وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس

75

اسلام آباد: قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں کالعدم تنظیم کے ساتھ مذاکرات کے دروازے بند نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ وفاقی وزیر داخلہ نے موجودہ صورتحال پر قومی سلامتی کمیٹی کو اعتماد میں لیا۔

تفصیلات کے مطابق قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس  وزیراعظم  عمران خان کی زیر صدارت ہوا جس میں وفاقی وزراء اور مسلح افواج کے سربراہان نے بھی شرکت کی۔ ذرائع کے مطابق قومی سلامتی کمیٹی کو کالعدم تنظیم کے احتجاج سے متعلق رپورٹ پیش کی گئی۔ اجلاس میں مظاہرین سے نمٹنے کی حکمت عملی پر غور کیا گیا۔ شرکا کو کالعدم تنظیم کے بیرونی رابطوں سے متعلق بھی بتایا گیا۔ قومی سلامتی کمیٹی اجلاس کو موجودہ صورتحال پر بریفنگ دی گئی۔ جس میں بتایا گیا کہ پولیس پر سیدھی فائرنگ کی گئی، فائرنگ سے کچھ پولیس اہلکار شہید اور درجنوں زخمی ہوئے ۔

یاد رہے کہ وزیر داخلہ شیخ رشید نے اسلام آباد میں اجلاس کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ  آج قومی سلامتی کمیٹی کا اہم اجلاس ہوا، اجلاس میں مذاکرات کی رپورٹ پیش کی، پنجاب میں پولیس کو رینجرز کے ماتحت کر دیا، امن و امان کو ہر صورت برقرار رکھا جائے گا، آج شام مذاکرات ہوں گے، ہم نے جو دستخط کیے تھے ان پر قائم ہیں، انہوں نے وعدہ کیا تھا جی ٹی روڈ کھول دیں گے، 4 پولیس اہلکارشہید جبکہ 80 زخمی ہوئے ہیں۔

 

تبصرے بند ہیں.