میران شاہ میں آپریشن ، 2 جوان شہید ، ایک دہشت گرد ہلاک

97

 

میران شاہ : شمالی وزیر ستان  کے میران شاہ میں سیکورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان جھڑپ میں 2 سیکورٹی اہلکار شہید اور ایک دہشت گرد ہلاک ہوگیا۔

 

آئی ایس پی آر کے مطابق میران شاہ میں دہشتگردوں کی موجودگی کی اطلاع پرسکیورٹی فورسز  نے آپریشن کیا۔ دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسز پر فائرنگ کردی جس سے  پاک فوج کے دو جوان شہید ہوگئے ۔ سیکورٹی فورسز کی فائرنگ سے دہشت گرد مارا گیا۔

 

شہید ہونے والوں میں نائیک خلیل اور سپاہی شاکراللہ شامل ہیں ۔دہشت گردوں کے قبضے سے  ہتھیار اور اسلحہ برآمد ہوا ۔ سیکیورٹی اہلکاروں نے علاقے کا محاصرہ کرلیا ہے۔

گزشتہ روز میران شاہ میں دہشتگردوں کی موجودگی کی اطلاع پرسکیورٹی فورسز نے آپریشن کیا تھا ۔ دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسز پر فائرنگ کر دی جس سے پاک فوج کے دو جوان شہید ہو گئے تھے جبکہ سیکورٹی فورسز کی فائرنگ سے دہشت گرد مارا گیا۔ دہشت گردوں کے قبضے سے ہتھیار اور اسلحہ برآمد ہوا ۔ سیکیورٹی اہلکاروں نے علاقے کا محاصرہ کر لیا ہے۔ شہید ہونے والوں میں نائیک خلیل اور سپاہی شاکر اللہ شامل تھے ۔

20 اکتوبر کو امن دشمنوں نے کیچ میں سیکیورٹی فورسز کی چوکی پر حملہ کیا تھا ۔ پاک فوج کے جوانوں کی جانب سے موثر جوابی کارروائی کی گئی۔ فائرنگ کے تبادلے میں سپاہی قیصر محمد شہید ہو گئے تھے۔ اسی روز تھل میں دہشت گردوں نے فوجی پوسٹ پر فائرنگ کر دی جس پر سیکیورٹی فورسز نے فوری اور موثر جوابی کارروائی کرتے ہوئے دہشت گردوں کو بھاگنے پر مجبور کر دیا۔ دہشت گردوں کیساتھ فائرنگ کے تبادلے میں 26 سالہ سپاہی وقاص شہید ہو گیا تھا۔

دو روز قبل شمالی وزیرستان کےعلاقے اسپن وام میں دہشتگردوں نے سکیورٹی فورسز کی پوسٹ پر فائرنگ کر دی تھی جس سے 25 سالہ سپاہی سیف اللہ شہید ہو گئے تھے۔

اس سے قبل 12 اکتوبر کو شمالی وزیرستان کے علاقے میر علی میں دہشتگردوں کے خلاف آپریشن کیا گیا۔ سکیورٹی فورسز نے آپریشن دہشتگردوں کی موجودگی کی اطلاع پر کیا۔ آپریشن میں ایک دہشتگرد ہلاک جبکہ اسلحہ و گولہ بارود برآمد کر لیا گیا تھا۔

گزشتہ ماہ 28 ستمبر کو سیکیورٹی فورسز نے خیبرپختونخوا کے ضلع جنوبی وزیرستان میں دہشت گردوں کی موجودگی کی خفیہ اور مصدقہ اطلاعات پر آپریشن کیا۔ دہشتگردوں کے ٹھکانے کا محاصرہ کرنے کے دوران پاک فوج اور دہشتگردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا فائرنگ کے تبادلے کے دوران 10 دہشتگرد ہلاک ہو گئے تھے ۔ ہلاک دہشت گردوں میں 4 اہم کمانڈر بھی شامل تھے۔ ٹھکانے سے بھاری تعداد میں اسلحہ و بارود برآمد ہلاک ہونے والے تمام دہشت گرد بارودی سرنگوں کے دھماکوں میں ملوث تھے۔

تبصرے بند ہیں.