مہنگائی پر وزیراعظم کو بد دعائیں دینے والا شہری ضمانت پر رہا

151

مردان: وزیراعظم عمران خان کو بد دعائیں دینے کے لیے مسجد میں اعلان کرنے والے شہری کو مقدمہ درج کرکے پولیس نے گرفتار کرلیا تھا، تاہم بعد ازاں عدالت نے اسے ضمانت پر رہا کر دیا۔

رپورٹس کے مطابق سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں شہری مسجد کے لاؤڈ سپیکر کے ذریعے اہل علاقہ سے اپیل کر رہا تھا کہ مہنگائی بہت زیادہ ہو گئی ہے لہٰذا وہ سب مل کر اجتماعی طور پر عمران خان کو بد دعائیں دیں۔

خیال رہے کہ پاکستانی قانون کے مطابق لاؤڈ سپیکر کے غلط استعمال پر پابندی عائد ہے، اس کی خلاف ورزی پر زیادہ سے زیادہ ایک ماہ کی قید اور جرمانے کی سزا ہو سکتی ہے۔

غفران نامی شہری نے مسجد کے لائوڈ سپیکر کے ذریعے اہل علاقہ سے اپیل کی تھی کہ وہ سب مل کر اجتماعی طور پر عمران خان کو بد دعائیں دیں۔ پولیس نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے اس کیخلاف مقدمہ درج کر لیا تھا۔

اس شہری کی تقریباً ڈیڑھ منٹ کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی جس میں وہ لوگوں سے اپیل کرتا نظر آیا کہ تمام مرد اور خواتین مل کر دعائیں کریں کہ ہماری عمران خان سے جان چھوٹ جائے کیونکہ ان کے دور حکومت میں مہنگائی میں بے پناہ اضافہ ہو چکا ہے۔

قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ غفران نامی شہری کیخلاف مقدمہ عمران خان کو بددعائیں دینے پر نہیں بلکہ لائوڈ سپیکر کے غلط استعمال پر درج کیا گیا تھا۔ قانون میں واضح طور پر لکھا ہے کہ مسجد کا لاؤڈ سپیکر اذان کے علاوہ کسی بھی مقصد کیلئے استعمال نہیں ہو سکتا۔

تبصرے بند ہیں.