فلم “نو ٹائم ٹو ڈائے” نے پانچ روز میں 20 ارب سے زائد کا بزنس کر لیا

98

لاس اینجلس: دنیا کے سب سے بڑے جاسوس کی دھوم، فلم “نو ٹائم ٹو ڈائے” نے ریلیز کے پہلے پانچ روز میں 20 ارب سے زائد کا بزنس کرلیا۔

یونیورسل پکچرز کا کہنا ہے کہ اداکار ڈینیل کریگ کی آخری جیمز بانڈ فلم نے برطانیہ اور آئرش سنیما گھروں میں اپنے پہلے دن5 ملین پاؤنڈ کا بزنس کیا ہے۔

کورونا وائرس کی وجہ سے کئی بار تاخیر کا شکار ہوئی فلم کو 30 ستمبر کو ریلیز کیا گیا تھا جبکہ 29 ستمبر کو اس کا رنگا رنگ پریمئیر ہوا۔

جیمز بانڈ فلم نو ٹائم ٹو ڈائی کے پریمیئر میں شہزادی کیٹ میڈلٹن، شہزادہ ولیم اور پرنس چارلس کی شرکت نے چار چاند لگائے۔

فلم کا پریمیئر رائل البرٹ ہال میں ہوا تھا جس میں شاہی خاندان کے افراد نے خصوصی شرکت کی۔ گولڈن گاؤن پہنے شہزادی کیٹ میڈلٹن مرکز نگاہ رہیں۔ شہزادی کیٹ میڈلٹن ڈینیئل کریگ سے کافی متاثر نظر آئیں اور انہوں نے ان کے کام کو بھی خوب سراہا۔

دو ہفتے قبل جیمز بانڈ فلموں کے اداکار کو برطانوی رائل نیوی کو اعزازی کمانڈر بھی بنایا گیا ہے۔

واضح رہے کہ دنیا کے سب سے بڑے جاسوس کا کردار ادا کرنے والے ڈینیئل کریگ ریٹائرڈ ہو گئے ہیں جس کے بعد نئے جیمز بانڈ کی تلاش شروع ہو چکی ہے۔

ہالی ووڈ اداکارہ ڈینیل کریگ 2006 سے جیمز بانڈ کا کردار ادا کر رہے ہیں اور ڈینیئل کریگ نے نو ٹائم ٹو ڈائے کے لیے ساڑھے 4 ارب روپے معاوضہ لیا۔

ڈینیئل کریگ اپنی آخری جیمز بانڈ فلم کی شوٹنگ کے دوران اپنے کردار کو الوداع بھی کہہ چکے ہیں اور ان کا کہنا تھا کہ جیمز بانڈ کا کردار ادا کرنا ان کے لیے کسی اعزاز سے کم نہیں۔

تبصرے بند ہیں.