کوئی بھی ہوم سیریز کھیلنے اب نیوٹرل وینیو پر نہیں جائیں گے، چیئرمین پی سی بی

45

لاہور: نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے انکار کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئرمین رمیز راجہ نے دبنگ اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اب ہم اپنی کوئی بھی ہوم سیریز کھلینے کسی نیوٹرول وینیو پر نہیں جائیں گے۔ 

ورچوئل پریس کانفرنس کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین نے نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے انکار کے بعد ایشیائی بلاک بنانے کا عندیہ دے دیا۔ رمیز راجہ نے کہا کہ ہم کسی میچ کا بائیکاٹ نہیں کریں گے، یہ جاننا ہے کہ ہمارے ساتھ ایسا کیوں کیا گیا جبکہ اپنی خودداری اور کرکٹ کے لیے سخت فیصلے کرنا ہوں گے۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے لیے اب تک سبق ہی سبق ہے اور پتا چل رہا ہے کہ کون دوست ہے اور کون ساتھ کھڑا ہے کیونکہ یہ سب ہمارے ہاں ایک مائنڈ سیٹ کے ساتھ آتے ہیں لیکن ہمیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار نہیں ہونا اور ہمیں ایک ساتھ آگے بڑھنا ہے۔

 

رمیز راجہ نے کہا کہ اب یہ نہیں ہو گا کہ وہ ہم سے اپنا مطلب نکالیں اور چلے جائیں جبکہ نیوزی لینڈ کو تھریٹ تھا تو شئیر کرتے اور اب دبئی پہنچ گئے ہیں تو اب بتا دیں تاہم ہمیں اپنی پوزیشن کے حساب سے اپنی اننگز کھیلنی ہے۔

 

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے دورے منسوخ ہونے کے تمام معاملات آئی سی سی میں اٹھانے ہیں اور ایسی کون سی تھریٹ تھی کہ وہ ایک دم بھاگ گئے اور انہیں بتانا پڑے گا کیونکہ ہمارے جذبات کی قدر نہیں کی گئی ہے اور ہمیں کوئی بلاک ایسا نہیں بنانا لیکن جو لوگ ہمارے ساتھ ہیں انہیں ساتھ لے کر چلیں گے۔

 اس سے قبل پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجہ کی جانب سے انگلش کرکٹ بورڈ کے چیئرمین ای ین واٹ مور کو خط لکھا گیا ہے جس کا جواب دینے سے انکار کردیا گیاہے۔

ذرائع کے مطابق خط میں پاک انگلینڈ میچز پنڈی سے لاہور منتقل کرنے کی پیشکش کی گئی تھی اور انگلش ٹیم کو ہوٹل کے بجائے ہائی پرفارمنس سینٹر (ایچ پی سی) میں قیام کے لیے کہا گیا تھا۔

انگلینڈ کے دورہ پاکستان کے موقع پر لاہور میں قذافی اسٹیڈیم اور اطراف کو فوج کی مدد سے چار دن کے لیے سیل کیا جانا تھا اور ہائی پرفارمنس سینٹر سے انگلش کھلاڑی پیدل گراؤنڈ آسکتے تھے۔

تبصرے بند ہیں.