حسن آخوند نے افغانستان پر پابندیوں کے خاتمے کا مطالبہ کر دیا

47

کابل: افغانستان کے وزیر اعظم حسن آخوند نے افغانستان پر پابندیوں کے خاتمے کا مطالبہ کر دیا۔

افغان میڈیا کے مطابق افغانستان کے وزیراعظم حسن آخوند سے عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے وفد نے ملاقات کی۔ افغانستان کے وزیر اعظم نے اہم مطالبات عالمی ادارہ صحت کے سربراہ کے سامنے رکھ دیے۔

عالمی ادارہ صحت کے سربراہ نے صحت کے شعبے میں افغانستان کی بھرپور مدد فراہم کرنے کی یقین دہانی کرائی۔

اس موقع پر افغان وزیر اعظم نے کہا کہ اگر صحت کے شعبے میں مدد نہ ملی تو افغانستان کے جسپتال بند ہو جائیں گے۔ پچھلی حکومتوں میں کرپشن عام تھی کیونکہ عالمی برادری ان کی وسیع پیمانے پر مدد کر رہی تھی۔

انہوں نے کہا کہ افغانستان پر پابندیاں ختم کر کے مسائل مذاکرات کے ذریعے حل کیے جائیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں افغان طالبا ن نے عبوری نظام حکومت کے بعد نیاآئینی ڈھانچہ بھی جاری کر دیا اور ملک کا سرکاری مذہب اسلام اور تمام قوانین بھی اسلامی ہونگے ۔

افغان میڈیا رپورٹس کے مطابق طالبان نے عبوری نظام حکومت کیلئے نیا آئین بھی جاری کر دیا جس میں مذہب ،قوانین اور خارجہ پالیسی سے متعلق مکمل پالیسی دی گئی،نئے آئین کے مطابق افغان خارجہ پالیسی بھی اسلامی شریعت کے مطابق ہی ہو گی اور تمام پڑوسیوں کےساتھ حل طلب مسائل پرامن طریقے سے حل کیے جائیں گے۔

نئے آئین کے مطابق سرکاری مذہب اسلام ،قوانین بھی اسلامی ہی ہونگے ،نئے آئین کے بنیادی ڈھانچے کے مطابق عوام کو بنیادی انسانی حقوق اور انصاف یکساں طور پر حاصل ہو گا۔

تبصرے بند ہیں.