متحدہ عرب امارات نے پاکستان میں ریپڈ پی سی آر ٹیسٹس کے معیار پر تحفظات کا اظہار کر دیا

132

دبئی: متحدہ عرب امارات نے پاکستان میں ریپڈ پی سی آر ٹیسٹس کے معیار پر شدید تحفظات کا اظہار کر دیا ہے کیونکہ متحدہ عرب امارات پہنچنے والے 684 افراد میں کورونا وائرس پایا گیا۔

 

‍‍ذرائع کے مطابق متحدہ عرب امارات کے تحفظات کے بعد وفاقی وزارت صحت نے تمام ملکی انٹر نیشنل ائیرپورٹس پر لیبارٹریوں کے فوری معائنے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ ائیر پورٹس پرکام کرنے والی اکثر لیبارٹریوں کا عملہ غیر تربیت یافتہ ہے۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ متحدہ عرب امارات پہنچنے والے 684 افراد میں کورونا وائرس پایا گیا۔ متحدہ عرب امارات کو پاکستانی ایئر پورٹس پر ریپڈ پی سی آر ٹیسٹ کرنے والی لیبارٹریوں کے معیار پر شدید تحفظات ہیں۔

 

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے مطابق گزشتہ مہینے پاکستان سے 75 ہزار مسافر متحدہ عرب امارات گئے اور پاکستان سے یو اے ای جانے والے تمام 75 ہزار مسافروں کا ایئرپورٹ پر ریپڈ پی سی آر ٹیسٹ کیا گیا۔

 

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں  شہر قائد میں قائم جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ سے متحدہ عرب امارات (یو اے ای) جانے والے مسافروں کے لیے ‘ریپڈ پی سی آر ٹیسٹ’ کی فیسوں میں کمی کر دی گئی۔

جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ کراچی سے دبئی، شارجہ اور ابوظہبی جانے والے مسافروں کے ریپڈ پی سی آر ٹیسٹ کی فیسوں میں کمی کی گئی ہے۔ مذکورہ ٹیسٹ کی فیس اب صرف 5 ہزار روپے ہو گی۔ تمام ایئرلائنوں کے ریپڈ پی سی آرٹیسٹ کے چارجز 5 ہزار روپے مختص کر دیے گئے۔

 

متحدہ عرب امارات جانے والے تمام مسافر 5 ہزار روپے میں اپنا ٹیسٹ کرواسکیں گے۔ ایئرپورٹ پر موجود تمام لیبارٹریوں کو اس ضمن میں مطلع کر دیا گیا ہے۔

 

اس سے قبل پشاور، فیصل آباد ملتان لاہور ائیرپورٹ پر بھی رپیڈ پی سی آر ٹیسٹ کی فیسوں میں کمی کی گئی ہے جس سے مسافر بھرپور فائدہ اٹھا رہے ہیں۔

 

واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات کی طرف سے اب ایسے تمام مسافروں کو اپنے ملک میں آنے کی اجازت دیدی گئی ہے جنہوں نے سائنو فارم ویکسین بھی لگوائی ہو گی ،دستاویزات کے مطابق یو اے ای حکومت کی ویب سائٹ پر سائنوفارم کو پہلے نمبر پر رکھا گیا ہے، یو اے ای میں داخلے سے قبل مسافروں کو ویب سائٹ پر اپنی تفصیلات دینا ہوں گی،مسافروں کو ویکسین سرٹیفکیٹ کے ساتھ ویکسین کی تفصیل بھی دیناہوگی۔

 

یو اے ای حکومت کے مطابق سائنو فارم، فائزر، اسپوتنک اور ایسٹرازینیکا ویکسین لگوانے افراد کو داخلے کی اجازت ہو گی اور اس کے علاوہ جانسن اینڈ جانسن اور موڈرنا ویکسین لگوانے  والوں کو بھی اجازت دی گئی ہے۔ یو اے ای جانے والے مسافروں کو اپنی تفصیلات میں کورونا ویکسینیشن کی پہلی اور دوسری ڈوز کی تفصیل دینا ہو گی جبکہ ویکسینیشن سرٹیفکیٹ پرکیو آر کوڈ نہ ہونے پر دفتر خارجہ سے تصدیقی مہرلگوانا ہو گی۔

 

تبصرے بند ہیں.