بجلی مہنگی ہونے کےباوجود عوام کیساتھ بڑا دھوکہ ،بجلی کے بلوں میں بڑا فراڈ پکڑا گیا 

80

اسلام آباد:ایک طرف عوام مہنگائی کا رونا رو رہی ہے ،دوسری طرف ہر ماہ مہنگی بجلی کے باعث عوام کیلئے بجلی کے بل دینا محال ہو چکے ہیں لیکن ان تمام کے باوجود بھی حکومتی اداروں کو عوام پر رحم نہ آیا اور بجلی کے بلوں میں مہنگے ٹیرف کیساتھ اووربلنگ کا بوجھ بھی ڈال دیا گیا جس کے بعد رہی سہی کسر لیسکو ،گیپکو،فیسکو اور میپکو نے نکال دی ۔

بجلی تقسیم کار کمپنیوں کی جانب سے کروڑوں روپے کی اوور بلنگ  کی تصدیق ہو گئی ،پاور انفارمیشن ٹیکنالوجی کمپنی نے تحقیقاتی رپورٹ وزارت میں جمع کرا دی .

پی آئی ٹی سی کی رپورٹ کے مطابق لیسکو میں 46 بیچز میں سے 6 میں اوور بلنگ ہوئی اور گیپکو میں 36 میں سے 7بیچز میں اوور بلنگ ہوئی،رپورٹ میں بتایا گیا کہ فیسکو میں 30 میں سے 11 بیچز میں اووربلنگ ثابت ہوئی۔

واضح رہے کہ میڈیا نے بجلی کی تقسیم کارکمپنیوں کی 31 دنوں سے زیادہ کی اووربلنگ کا انکشاف کیا تھا جس پر  وفاقی وزیر توانائی نے نوٹس لیتے ہوئے جانچ پڑتال کا حکم دیا تھا۔میڈیا کی تحقیقات کے مطابق، 8 ماہ کے دوران ملتان، سکھر، کراچی، لاہور، حیدر آباد، گجرانوالہ اور فیصل آباد کے لاکھوں صارفین کو بجلی کے بل طے شدہ 31 روز کے بجائے 37 روز کی بنیاد پر کئی بار بھیجے گئے۔ان 8 ماہ کے دوران 37 روز کے دوران استعمال کی گئی بجلی کے سب سے زیادہ بل ملتان کی پاور کمپنی میپکو نے بھیجے۔

31روز میں 300 یونٹ کا بل 3200 روپے بنتا ہے، لہٰذا اس طرح صرف ایک روز کے اضافے سے بلوں میں 600 روپے کا اضافہ ہوجا تا ہے۔خیال رہے کہ اس طرح بل زیادہ ریٹ والے سلیب کے لحاظ سے بنے گا اور صارف کو زیادہ رقم ادا کرنی پڑے گی۔

تبصرے بند ہیں.