وفاقی حکومت کا چیئرمین نیب کی مدت ملازمت میں توسیع کیلئے آرڈیننس لانے کا عندیہ

42

لاہور: وفاقی حکومت نے چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کی مدت ملازمت میں توسیع کیلئے آرڈیننس لانے کا عندیہ دے دیا۔

 

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم نے کہا کہ چیئر مین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو ابھی ایکسٹینشن دینے کے حوالے سے حتمی فیصلہ نہیں ہوا، توسیع دینے کے حوالے سے بات ضرور ہو رہی ہے۔

 

اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ چیئر مین نیب کی تقرری کے لیے آئین کی شق سکس بی ون کے تحت وزیراعظم، اپوزیشن لیڈرکے درمیان مشاورت ہونی چاہیے، قانون میں ترمیم آرڈیننس کے ذریعے بھی ہو سکتی ہے، قانون کے حوالے سے ہفتے تک فیصلہ ہوجائے گا۔

 

وفاقی وزیر قانون کا کہنا تھا کہ چیئرمین نیب کے حوالے سے مشاورت ہو گی، چیئرمین کے حوالے سے ایکٹ آف پارلیمنٹ ضرورآئے گا۔ جسٹس (ر) جاوید اقبال کی پرفارمنس بہت اچھی ہے، چیئر مین کے حوالے سے آئندہ چند دنوں میں فیصلہ ہوجائے گا۔

 

فروغ نسیم نے اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ نیب کے پراسیکیوٹرجنرل اصغر حیدر بہت زبردست کام کر رہے ہیں، پراسیکیوٹراصغرحیدرایکسٹنشن نہیں لینا چاہ رہے تھے۔

 

تبصرے بند ہیں.