وزیراعظم اور روسی صدر کے درمیان رابطہ، افغانستان کی تعمیر و ترقی پر تبادلہ خیال

25

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان اور روس کے صدر ویلادیمیر پیوٹن کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا ہے۔ 

 

وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل کی طرف سے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بتایا گیا کہ روس کے صدر ولادیمیر پیوٹن نے وزیراعظم عمران خان کو ٹیلیفونک کیا ہے۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان افغانستان کی موجودہ صورتحال، دو طرفہ تعاون اور شنگھائی تعاون تنظیم سے متعلق بات چیت کی گئی۔

 

وزیراعظم عمران خان نے علاقائی سلامتی اور خوشحالی کیلئے افغانستان میں امن و استحکام کی اہمیت پر زور دیا۔ دونوں رہنماؤں نے قریبی رابطے میں رہنے پر اتفاق کیا۔

 

شہباز گل کے مطابق روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے وزیراعظم عمران خان کیساتھ 25 اگست 2021ء کے ٹیلیفونک رابطے کی بات چیت کو دہرایا۔

خیال رہے کہ گزشتہ ماہ 25 اگست کو روس کے صدر ویلادیمیر پیوٹن اور وزیراعظم عمران خان کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا، جس میں افغانستان میں ابھرنے والی صورت حال اور دو طرفہ تعلقات پر تبادلہ خیال گیا۔

 

وزیراعظم کے دفتر سے جاری بیان کے مطابق وزیراعطم عمران خان نے زور دیتے ہوئے کہا کہ پرامن، محفوظ اور مستحکم افغانستان خطے کے استحکام اور پاکستان کے لیے انہائی اہمیت رکھتا ہے۔ افغانستان کے عوام کے حقوق کے تحفظ، سلامتی اور امن کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ جامع سیاسی حل آگے بڑھنے کا بہترین راستہ ہے’۔

 

انہوں نے کہا کہ عالمی برادری افغانستان کے عوام کی مدد کے لیے مثبت انداز میں حصہ لے، بنیادی انسانی ضروریات کی تکمیل کے لیے مدد کرے اور معاشی بحالی کو یقینی بنائے۔ وزیراعظم نے افغانستان میں ابھرنے والے حالات سے نمٹنے کے لیے موبوط حکمت عملی کی اہمیت بھی اجاگر کی

 

روسی صدر کو وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان ٹرائیکا پلس فارمیٹ کے کردار کی انتہائی اہمیت سے جڑا ہوا ہے۔ انہوں نے روس اور پاکستان کے درمیان تعلقات میں ہونے والی بہترین پر اطمینان کا اظہار کیا جہاں مختلف شعبوں میں اعلیٰ سطح پر تبادلے اور تعاون میں اضافہ ہو رہا ہے۔

 

وزیراعظم ہاؤس سے جاری بیان کے مطابق ‘وزیراعظم اعادہ کیا کہ تجارت کے ساتھ ساتھ توانائی کے شعبے میں دو طرفہ شراکت حکومتوں کے اقدامات ہیں اور اس میں سب سے اہم پاکستان اسٹریم گیس پائپ لائن پروجیکٹ ہے’۔

 

دونوں رہنماؤں نے خطے کے امن و استحکام کے لیے شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) کے تحت تعاون جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔

 

اس موقع پر وزیراعظم عمران خان نے روسی صدر کو دورہ پاکستان کی دعوت کی یاددہانی کروائی۔

 

یاد رہے کہ وزیر اعظم عمران خان اور روسی صدر پیوٹن کے درمیان جون 2019 میں کرغزستان کے دارالحکومت بشکیک میں شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) کے اجلاس میں شرکت کے دوران ملاقات ہوئی تھی۔

 

تبصرے بند ہیں.