میکسیکو زلزلے سے لرز اٹھا، لوگ خوف کے مارے گھروں سے نکل آئے

214

ایکا پولکو: میکسیکو کو شدید بارشوں اور سیلاب کے بعد زلزلے کی آفت کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ زلزلے کے یہ شدید جھٹکے ملک کے جنوب مغربی علاقوں میں محسوس کئے گئے، لوگ ڈر کے مارے دیوانہ وار گھروں سے نکل آئے۔ حکام نے ایک شہری کے ہلاک ہونے کی تصدیق کی ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق میکسیکو میں زلزلے کے یہ شدید جھٹکے گزشتہ رات محسوس کئے گئے۔ زلزلہ محسوس ہوتے ہی لوگ محفوظ رہنے کیلئے گھروں سے باہر نکل آئے اور خوف کے مارے ساری رات سڑکوں پر گزاری۔

زلزلہ پیما مرکز کے مطابق ریکٹر سکیل پر زلزلے کی شدت 7 اعشاریہ صفر ریکارڈ کی گئی ہے۔ شدید زلزلے سے کئی عمارتوں کو نقصان پہنچا۔ متعدد بلڈنگز میں بڑی بڑی دراڑیں پڑنے کے بعد حکام نے انھیں مکمل طور پر خالی کرا لیا ہے۔

اس زلزلے کا مرکز ایکا پولکو سے گیارہ میل دور شمالی مشرقی علاقہ تھا۔ گوریرو کے گورنر ہیکٹڑ ایستودیلو نے میڈیا کو دیئے گئے اپنے بیان میں تصدیق کی ہے کہ اس قدرتی آفت سے ایک شخص ہلاک ہو چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ زلزلے سے بجلی کا نظام معطل ہے جس پر قابو پانے کی کوشش کی جا رہی ہے جبکہ مالی نقصان کے ازالے کیلئے حکومت کی جانب سے شہریوں کو سہولت دی جائے گی۔

زلزلے کی ہولناکی کے بارے میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے 70 سالہ ایک شہری نے کہا کہ اس قدرتی آفت نے میرے 1985ء میں آنے والے زلزلے کی یاد تازہ کر دی ہے۔ خیال رہے کہ 1985ء میں میکسیکو میں آنے والے شدید زلزلے سے ہزاروں افراد لقمہ اجل بن گئے تھے۔

خیال رہے کہ میکسیکو کو ان دنوں شدید بارشوں اور سیلاب کی قدرتی آفات کا بھی سامنا ہے۔ اس وقت پورے ملک میں ایمرجنسی نافذ ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ہسپتال سیلابی ریلے کی زد میں آنے سے کم از کم 17 مریض ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ امدادی کارروائیوں میں 40 مریضوں کو ریسکیو کر لیا گیا ہے۔

تبصرے بند ہیں.