پاکستان کی کابل میں دھماکوں کی شدید الفاظ میں مذمت

125

اسلام آباد: حکومت پاکستان کی جانب سے کابل میں ہونے والے دہشت گرد حملے کی شدید مذمت کی گئی ہے۔

 

ترجمان دفترخارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان کابل ایئرپورٹ پر دہشتگرد حملے کی شدید مذمت کرتا ہے۔ دہشتگردی کے نتیجے میں بچوں سمیت کئی قیمتی جانیں ضائع ہوئیں۔

 

دفترخارجہ نے بیان جاری کیا کہ پاکستان ہر قسم کی دہشتگردی کی پرزور مذمت کرتا ہے۔ ہم  سوگوار خاندانوں سے ہمدردی اور تعزیت کرتے ہیں۔ دہشتگرد حملے میں زخمی ہونے والوں کی جلد صحت یابی کیلئے دعاگو ہیں۔

 

خیال رہے کہ کابل ایئرپورٹ کے قریب تین دھماکے ہوئے ہیں۔ دھماکوں میں کم سے کم 60 افراد جاں بحق اور 140 زخمی ہو گئے ہیں۔ زخمی ہونے والوں میں امریکی اور طالبان کے گارڈز بھی شامل ہیں۔

 

ترجمان طالبان سہیل شاہین نے بتایا کہ کابل ایئر پورٹ میں لوگوں کے جمع ہونے کی جگہ پر 2 دھماکے ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ دھماکوں کے مقامات پر امریکی افواج کا کنٹرول تھا۔

 

سہیل شاہین نے کہا کہ کابل ایئر پورٹ پرہونے والے دھماکوں کی مذمت کرتے ہیں۔ مجرموں کوانصاف کے کٹہرے میں لانے کی ہرممکن کوشش کریں گے۔ افغان میڈیا کے مطابق کابل ایئر پورٹ کے مشرقی گیٹ پر دھماکہ ہوا اور بعد میں فائرنگ کی آواز بھی سنی گئی ہے۔

 

امریکی وزارت دفاع کے ترجمان جان کربی نے بھی دھماکوں کی تصدیق کی ہے۔ جان کربی کا کہنا ہے کہ زخمیوں کی تعداد کے متعلق فی الحال کچھ نہیں بتایا جا سکتا۔ کابل ایئر پورٹ پر حملے کی اطلاعات موجود تھیں۔ برطانوی وزیربرائے آرمڈ فورسزجیمزہیپی نے خدشہ ظاہر کیا تھا حملہ ہو سکتا ہے۔

 

 

 

 

 

 

تبصرے بند ہیں.