ہمارے معاشرے میں عورت محفوظ نہیں، ’فیمنسٹ‘ ٹھیک کہتی ہیں: خلیل الرحمان قمر

200

لاہور: مشہور ڈرامہ نویس خلیل الرحمان قمر نے یوم آزادی کے موقع پر لاہور میں ایک خاتون کیساتھ پیش آنے والے بہیمانہ واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ’فیمنسٹ‘ کے اس دعوے کو تسلیم کرتے ہیں کہ ہمارے ملک میں کسی عورت کی حرمت اور عزت محفوظ نہیں ہے۔

خیال رہے کہ خلیل الرحمان قمر کو ’فیمنسٹ‘ کا سب سے بڑا ناقد تصور کیا جاتا ہے، وہ متعدد ٹیلی وژن پروگراموں میں ببانگ دل یہ کہتے نظر آتے رہے ہیں کہ ’فیمنسٹ‘ دراصل غیر ملکی ایجنڈا اور ہماری اقتدار اور روایات کے خلاف ہے۔

تاہم اب لاہور میں ایک خاتون کیساتھ پیش آئے واقعے نے انھیں یہ کہنے پر مجبور کر دیا ہے کہ ’فیمنسٹ‘ درست ہیں، یہ بات اب سب کے سامنے عیاں ہو چکی ہے کہ ہمارے ملک میں عورت محفوظ ہی نہیں ہے۔

یہ بات انہوں نے ایک نجی ٹیلی وژن کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے جب سے سوشل میڈیا پر اس واقعے کی ویڈیو دیکھی، وہ بہت دل گرفتہ ہیں۔ وہ چاہتے ہیں کہ اس پر بات کریں لیکن ان کے پاس اس بہیمانہ واقعے کی مذمت کرنے کیلئے الفاظ نہیں ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ایک نہتی خاتون پر حملہ کرنے والے غنڈے تھے جنہوں نے ملک کو پوری دنیا میں بدنام کر دیا ہے۔ کیا کوئی پاکستانی اس واقعے کا دفاع کر سکتا ہے کہ ایک مسلم ملک میں ایک نہتی خاتون پر سینکڑوں افراد نے حملہ کیوں کیا؟

انہوں نے کہا کہ جب ان غنڈوں نے اس نہتی خاتون کو گھیرا ہوا تھا تو وہاں کوئی ایک بھی غیرت مند شخص نہیں تھا جو اپنی جان پر کھیل کر اس کی عزت بچا سکتا؟

تبصرے بند ہیں.