download (1) copy

قندیل قتل کیس، مفرور مفتی عبدالقوی ہائی وے پر گرفتار

ملتانٟ: ماڈل قندیل بلوچ قتل کیس میں ضمانت منسوخ ہونے پر مفرور نامزد ملزم مفتی عبدالقوی کو جھنگ جاتے ہوئے گرفتار کرلیا گیا پو۔ تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت کے جج چو دھری امیر محمد کی عدالت میں قندیل بلوچ قتل کیس کی سماعت ہوئی۔ فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر عدالت نے قرار دیا کہ ملزم مفتی عبدالقوی کے خلاف دفعہ 302 اور 109 کے تحت کارروائی ہوگی۔ ۔ پولیس کے مطابق مفتی قوی پر قندیل کے بھائیوں کو قتل کے لیے اکسانے کا الزام ہے۔ 16 جولائی 2016 کو قندیل بلوچ کواس کے بھائی وسیم نے غیرت کے نام پر گلا دبا کر قتل کردیا تھا اور ملزم نے پولیس اور میڈیا کے سامنے قتل کا جرم قبول بھی کرلیا تھا جبکہ مفتی عبدالقوی نے عبوری ضمانت حاصل کر رکھی تھی۔عدالت نے ملزم کی درخواست ضمانت خارج کردی ۔ تو اس سے قبل ہی مفتی عبدالقوی احاطے عدالت سے چلے گئے ۔ عدالتی حکم پر پولیس کے سادہ لباس اہلکار مفتی عبدالقوی کی گرفتاری کے لیے ان کے گھر پہنچے جہاں اہلکاروں نے گھر سے ملحقہ مدرسے کی بھی تلاشی لی تاہم مفتی عبدالقوی وہاں موجود نہیں تھے۔پولیس نے مفتی عبد القوی نمبر حاصل کرلیا جس سے انہیں ٹریس کیا گیا۔ ایس پی ملتان کینٹ ڈاکٹر فہد نے بتایا کہ مفتی عبدالقوی کی گرفتاری جھنگ جاتے ہوئے ہائی وے پر عمل میں لائی گئی اور انہیں ہائی وے پولیس کی مدد سے گرفتار کیا گیا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *