images (2)

ہائیڈروجن بم ، عالمی طاقتیں شمالی کوریا کے خلاف بھڑک اٹھیں

نیو یارکٟ : شمالی کوریا کے ہائیڈروجن بم کے تجربے پر بڑی طاقتیں بھڑک اٹھیں۔ نیو نیوز کے مطابق اقوام متحدہ سلامتی کونسل کا شمالی کوریا معاملے پر ہنگامی اجلاس ہوا ۔ جس میں شمالی کوریا کے ہائیڈروجن بم کے تجربے کا معاملہ زیر غور آیا۔اجلاس امریکا، جاپان، فرانس، برطانیہ اور جنوبی کوریا کی درخواست پر بلایا گیا۔ اس سلسلے میں بتایا گیا ہے کہ اقوام متحدہ شمالی کوریاکےخلاف سخت اقدامات کرے، امریکی سفیر نکی ہیلی نے کہا شمالی کوریاکے سپریم لیڈرکم جونگ جنگ کی طرف جارہے ہیں، اب بہت ہو گئی شمالی کوریا کے صدر نے اپنے عمل سے ظاہر کیا ہے کہ وہ جنگ کا آ غازکر رہے ہیں۔ امریکا جنگ نہیں چاہتا، لیکن ان کے ملک کی برادشت بہت زیادہ نہیں ہے۔ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ امریکا نے آئندہ اجلاس میں شمالی کوریا پر مزید سخت پابندیوں والا مسودہ لانے کابھی اعلان کیا ہے جاپان کے سفیر نے کہا شمالی کوریاکے میزائل اورایٹمی تجربات کی مذمت کر تے ہیں۔ شمالی کوریاپرایٹمی پروگرام بندکرنے کیلئے دبا¶کی ضرورت ہے۔ چینی سفیر نے کہا امریکااورجنوبی کوریاکی مشترکہ مشقیں بندہونی چاہیئںجزیرہ نماکوریاپرفوجی مشقوں کی ضرورت نہیں :شمالی کوریاکے ایٹمی تنازع کوسفارتی طریقے سے حل کیاجائے۔ واضح رہے کہ اتوار کو شمالی کوریا نے ہائیڈروجن بم کا تجربہ کیا تھا تباہ کن بم کو بین البراعظمی میزائل کے ذریعے دنیا میں کسی بھی ہدف پر پھینکا جاسکتا ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *