download copy

اسلام آباد : قومی اسمبلی میں انتخابی اصلا حات کے بل کی منظور ی کے موقع حکومتی اراکین کی غیر خاضری پر اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ برہم ہو گئے انہوں نے سپیکر قومی اسمبلی سے کہا جو رکن نہیں آتا اس کو کرسی پر کھڑ ا کریں۔ وزیر اعظم اسمبلی آتے ہیں تو اراکین بھی آتے ہیں۔ تاریخی بل کی منظوری کے وقت حکومتی اراکین کیوں غائب ہیں۔ الیکشن بل 2017 کے موقع پر سب کو ہونا چاہئے تھا یہ سب کا بل ہے ۔ انہوں نے کہا حکومتی ارکان کا یہ رویہ ناقابل برداشت ہے ۔ قومی اسمبلی کے اجلاس میں صرف 50 اراکین موجود ہیں۔ ہم بائیس کروڑ عوام کو کیا دکھا رہے ہیں۔ انہوں نے اپوزیشن بل پر حکومت سے مکمل تعاون کر رہی ہے ۔ قومی اسمبلی کے کورم کو دیکھ کر شرم آتی ہے ۔ جب پارلیمنٹ کو مضبوط نہیں کرینگے تو باہر جا کر واویلا کرنے کا کوئی فائد نہیں۔ حکومت نے 52 وزیر بنائے مگر کوئی آنے کو تیار نہیں۔ کیا ہم فارغ ہیں جو یہاں آجاتے ہیں۔ انہوں نے کہا حکومتی ارکان ایوان کو سنجیدگی سے نہیں لے رہے ۔ اگر اپوزیشن کی نشاندہی کرے تو بل منظور نہیں ہوگا۔ بتائی تو سہی کہ کونسا وزیر ہے جو ایوان میں کونسا وزیر بیٹھا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *