images

اقوام متحدہ کے قافلے کوکئی گھنٹے یرغمال بنانے کے بعد رہا ئی

طرابلس: لیبیا میں القاعدہ کے ایک وفادار مسلح عسکری گروپ نے اقوام متحدہ کے ایک قافلے کو تیونس سے طرابلس آتے ہوئے حملے کا نشانہ بنایا اور عالمی ادارے کے سات کارکنان کوکئی گھنٹے یرغمال بنانے کے بعد انہیں رہا کردیااقوام متحدہ کے قافلے پر حملہ طرابلس کے قریب الزاویہ شہرکے الحرشہ کے علاقے میں کیا گیا۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق القاعدہ سے وابستہ ایک عسکری گروپ جس کی قیادت ابو عبیدہ الزاوی نامی کمانڈر کررہا ہےاقوام متحدہ کے اہلکاروں کو یرغمال بنایا تاہم انہیں بعد ازاں چھوڑ دیا گیا تھا۔ جنگجوں نے اقوام متحدہ کے اہلکاروں کو یرغمال بنانے کے بعد ان کے بدلے حال ہی میں گرفتارکیے گئے اپنے بعض شدت پسند ساتھیوں کی رہائی کا مطالبہ کیا تھا۔یرغمال بنائے جانے والے شہریوں میں سفارتی عملے کے ارکان، ایک ڈرائیور،ملیشیا سے تعلق رکھنے والے ایک ڈاکٹر اور اقوام متحدہ کے ایمی گریشن شعبے کے ایک اہلکار جس کی شناخت نہیں کی گئی شامل ہیں۔حکام کے مطابق اقوام متحدہ کے گرفتار تمام اہلکاروں کو چار گھنٹے کے بعد رہا کردیا گیا جس کے بعد انہیں طرابلس روانہ کردیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *